mono

ایرانی فورس جنگ میں شامل نہیں ہیں،العربیہ کی رپورٹ بےبنیاد/ ترجمان

جمعرات کے روز 29/ ربیع الاول 1438ھ بمطابق 29 / دسمبر 2016 ء کو العربیہ نامی ویب سائٹ نے کابل انتظامیہ کے حکام کے حوالے سے ایک رپورٹ شائع کی، کہ گویا  مملکت ایران کی فوجی دستے افغانستان کے مغرب میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین کے مفاد میں لڑنے والی جنگ میں شامل ہے۔

ہم اس پروپیگنڈے کی پرزور الفاظ میں تردید کرتے ہیں۔ ایسے پروپیگنڈے کابل انتظامیہ کے حکام کی جانب سے وقتافوقتا اس لیے کیے جاتے ہیں، تاکہ اپنی کمزوری اور شکست کو چھپا کر  اور امارت اسلامیہ کے مجاہدین کو دیگر ممالک سے جوڑ دیں۔

ہمارے پاس افغانستان میں رواں جہاد کی پیشرفت کے لیے کافی مجاہدین ہیں، کسی کے فوجی تعاون کی ضرورت نہیں ہے، ملک کے مشرق اور مغرب میں  امارت اسلامیہ کے مجاہدین عوام کی حمایت  اور ہرقسم کے خطرے سے نمٹنے کے لیے کافی ہیں۔

غیرجانبدار عالمی ابلاغی ذرائع یک طرفہ رپورٹیں شائع کرنے سے اپنے حیثیت کو خراب نہ کریں، افغانستان میں امارت اسلامیہ کے خلاف کابل انتظامیہ  کے اینٹلی جنس عناصر کے پروپیگندے کا شکار نہ بنے اور اپنے وقار کو نقصان نہ پہنچائے۔

ذبیح اللہ مجاہد ترجمان امارت اسلامیہ

یکم ربیع الثانی 1438 ھ بمطابق 30 / دسمبر 2016 ء

اضف رد

لن يتم نشر البريد الإلكتروني . الحقول المطلوبة مشار لها بـ *

*