%d9%88%db%8c%d8%ac%d8%a7%da%93-%d9%81%d8%b1%d8%a7%d9%87

مختلف علاقوں میں دشمن کو شکست

آج کی بات:

کابل انتظامیہ نے قابض استعماری قوتوں کی مدد سے افغانستان کے مختلف علاقوں میں موسم سرما سے فائدہ اٹھاتے ہوئے فوجی آپریشن کے نام پر اپنے مسلح دہشت گردوں کو جمع کر کے کچھ علاقوں میں مجاہدین کے مورچوں پر حملے کرنے کی جسارت کی، جسے نہ صرف یہ کہ پیش رفت نہیں مل سکی، بلکہ اللہ کے فضل سے دشمن شرم ناک شکست سے بھی دوچار ہوا ہے۔

ہلمند کے صوبائی دارالحکومت لشکرگاہ کے مضافات میں دشمن نے محاصرہ توڑنے کی مسلسل اور بھرپور کوشش کی، مگر ہر بار اللہ تعالی کی مدد سے ناکام رہا ہے۔ مجاہدین نے اسے پسپائی پر مجبور کر دیا ہے۔ جب کہ دشمن کے درجنوں اہل کار ہلاک و زخمی بھی ہوئے ہیں۔ جب کہ مجاہدین نے غنیمت میں گولہ بارود اور کافی ہتھیار بھی حاصل کر لیے ہیں۔

قندوز میں بھی دشمن کا یہی انجام ہوا ہے۔ قندوز شہر کے مضافات میں دشمن نے کوشش کی کہ اپنے دائرہ اختیار کو وسیع کر کے پیش قدمی کرے، لیکن یہاں بھی وہ رسواکن شکست سے دوچار ہوا ہے۔ جب کہ دشمن کے متعدد اہل کار ہلاک بھی ہوئے ہیں۔ مجاہدین نےدشمن کے فوجی وسائل اور گاڑیوں کو نقصان پہنچایا ہے۔ علاوہ ازیں کچھ ہتھیار مجاہدین کے ہاتھ بھی لگے ہیں۔

اس کے علاوہ دشمن نے صوبہ پکتیا کے ضلع زرمت میں بھی فوجی کارروائیوں کے نام پر اپنا زور آزمایا ہے، لیکن اللہ کے فضل و کرم سے اسے ایسی عبرت ناک شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے کہ لاشوں، وسائل اور  بہت سا جنگی سامان چھوڑ کر راہ فرار اختیار کرنا پڑی ہے۔

دشمن نے اپنی کارروائیوں کو آپریشن “شفق دوئم” اور “پامیر” کا نام دیا ہے۔ وہ مجاہدین کے حوالے سے خودساختہ ہلاکتوں اور اپنی کامیابی کے بار بار بلندبانگ دعوے کر رہا ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ بہت سے جن مقامات میں دشمن نے کارروائیوں کا دعوی ہے، وہاں مجاہدین نے دشمن کی کارروائی کی کوئی جھلک بھی محسوس نہیں کی ہے۔ جن علاقوں میں دشمن نے نمائشی کارروائی کی کوشش کی ہے، اسے وہاں بھی زبردست دھچکا لگا ہے۔ وہ اتنا لاچار ہے کہ اپنے ہلاک اور زخمی اہل کاروں کو میدان جنگ میں چھوڑ کر فرار ہو رہا ہے۔

افغانستان کے مختلف علاقوں میں دشمن کو بھاری بھر کم شکست کا سامنا ہے۔ اسے بڑے پیمانے پر جانی و مالی نقصان پہنچا ہے۔ اب اس کی ساری جنگ صرف پروپیگنڈے پر محدود ہو کر رہ گئی ہے۔ اس نے کئی بار  میڈیا پر فوجی آپریشن اور کامیابی کے بڑے دعوے کیے ہیں،  لیکن دشمن کی یہ کاغذی و زبانی کارروائیاں شرم ناک طریقے سے جھوٹ ثابت ہوئی ہیں۔

اضف رد

لن يتم نشر البريد الإلكتروني . الحقول المطلوبة مشار لها بـ *

*