monogram_of_the_islamic_emirate_of_afghanistan

شام کے حلب میں موجودہ بحران کے حوالے سے امارت اسلامیہ کا  اعلامیہ

ہم بہت ہی افسوسناک حالت کے گواہ ہیں، کہ شام کےشہر حلب  میں ہزاروں  سویلین اور نہتے شہری جن میں اکثریت خواتین اور بچوں کی ہیں، جنگ میں محصور ہیں۔ جن کے قتل، زخمی ہونے کے علاوہ ان کیساتھ بہت ہی برے رویے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔

امارت اسلامیہ شام کے معاملے میں شامل تمام جہتوں سے مطالبہ کرتی ہے کہ نہتے شہریوں اور بے دفاع مسلمانوں کی زندگی کو کسی قسم کا نقصان نہ پہنچائیں اور ان کے خلاف جاری ظلم و زیادتی کو ختم کردیں۔

شام کا تنازعہ عالم اسلام کے لیے  الہی امتحان کا عظیم سانحہ ہے۔ امارت اسلامیہ عالم اسلام، اسلامی کانفرنس، عالم اسلام کے علماءکرام اور تمام شامل جہتوں سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہاں موجودہ حالت کے متعلق غیرجانبدار  نہ رہے۔ عورتوں، بچوں اور نہتے عوام پر ہونے والے تشدد کا روک تھام کریں۔

شام میں بیرونی جہتوں کی دخل اندازی جو ہر عنوان سے ہوں، اس ملک کے مسئلے کو مزید پیچیدہ بناتا ہے۔ طیاروں  سے بمباری اور قتل عام اور وہاں جاری تشدد نے انسانی المیے کو جنم دی ہے،  جو کسی طرح جائز نہیں ہے۔ ہم شام کے مصیبت زدہ عوام، جنگ میں محصور نہتے لوگوں، باالخصوص ان خواتین اور بچوں  کیساتھ گہرے ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں،جو سانحات کے قربانی ہیں،جن کے ساتھ برا سلوک ہورہا ہے۔ اللہ تعالی سے دست بدعاء ہیں کہ عالم اسلام کے برے صورتحال پر رحم فرمائے۔ اپنے بندوں کو نجات دلادیں، ظالموں کے ہاتھ کوتاہ اور مظلوم ان کے ظلم سے نجات پائے۔ آمین یا رب العالمین

امارت اسلامیہ افغانستان

14/ ربیع الاول 1438 ھ بمطابق 14/ دسمبر 2016 ء

اضف رد

لن يتم نشر البريد الإلكتروني . الحقول المطلوبة مشار لها بـ *

*